منگل, جون 6, 2023
Google search engine
ہومتازہ ترینلکی مروت میں ...

لکی مروت میں دہشت گردوں کے ساتھ جھڑپ میں 3 جوان شہید ایکسپریس ٹریبیون


آئی ایس پی آر کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی فورسز نے ضلع میں مختصر وقت کے اندر دہشت گردوں کے تین حملوں کو ناکام بنا دیا۔

لکی مروت:

فوج کے میڈیا ونگ نے جمعہ کو بتایا کہ ضلع لکی مروت کے علاقوں امیر کلام اور تجبی خیل میں دہشت گردوں کے ساتھ جھڑپ کے دوران پاک فوج کے تین جوانوں نے جام شہادت نوش کیا۔

انٹر سروسز پبلک ریلیشنز (آئی ایس پی آر) کا کہنا ہے کہ واقعے کے نتیجے میں دہشت گرد کمانڈر موسیٰ خان سمیت 3 دہشت گرد مارے گئے۔

تاہم شدید فائرنگ کے تبادلے میں ضلع نوشہرہ کے رہائشی 40 سالہ نائب صوبیدار تاج میر، ڈسٹرکٹ ایبٹ آباد کے رہائشی 38 سالہ حوالدار ذاکر احمد اور ڈسٹرکٹ ڈی آئی خان کے رہائشی 29 سالہ سپاہی عابد حسین نے بہادری سے لڑتے ہوئے جام شہادت نوش کیا۔ آئی ایس پی آر نے مزید کہا۔

علاقے میں دہشت گردوں کے ایک اور حملے میں، لکی مروت میں سیکورٹی فورسز کی چوکی کے قریب موٹر سائیکل پر سوار خودکش بمبار نے دھماکہ کیا جس کے بعد فوج اور دہشت گردوں کے درمیان شدید فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔

پڑھیں شمالی وزیرستان میں دہشت گردوں کے ساتھ جھڑپ میں سپاہی شہید ہوگیا۔

جس کے نتیجے میں سیکیورٹی فورسز کی کارروائی میں چار دہشت گرد مارے گئے، مارے گئے دہشت گردوں سے اسلحہ اور گولہ بارود بھی برآمد ہوا۔

فوج نے مزید کہا کہ سیکورٹی فورسز نے بہادری سے لڑتے ہوئے ضلع میں مختصر وقت کے اندر مختلف مقامات پر دہشت گردوں کے تین حملوں کو ناکام بنا دیا۔

اس نے مزید کہا کہ علاقے میں پائے جانے والے دیگر دہشت گردوں کو ختم کرنے کے لیے علاقوں کی صفائی کی جا رہی ہے۔

پریس ریلیز میں کہا گیا کہ ’’پاکستان کی سیکیورٹی فورسز دہشت گردی کی لعنت کو ختم کرنے کے لیے پرعزم ہیں اور ہمارے بہادر سپاہیوں کی ایسی قربانیاں ہمارے عزم کو مزید مضبوط کرتی ہیں‘‘۔

اس ہفتے کے اوائل میں پاکستان آرمی کے دو جوان گلے لگا لیا ضلع خیبر کی وادی تیراہ میں دہشت گردوں کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے کے دوران شہادت۔

فوج کے میڈیا ونگ کے مطابق فوجیوں اور دہشت گردوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس کے نتیجے میں دو عسکریت پسند مارے گئے۔

25 اپریل کو آئی ایس پی آر کے ڈائریکٹر جنرل… تعریف کی اسلام آباد میں اپنی پہلی پریس کانفرنس میں انسداد دہشت گردی کی کوششوں پر سیکیورٹی فورسز کو

پڑھیں سوات سی ٹی ڈی دھماکہ دہشت گرد حملہ نہیں

میجر جنرل احمد شریف چوہدری نے جنوری سے اب تک آپریشنز کے دوران شہید ہونے والے 137 افسران اور جوانوں اور 117 افسروں اور جوانوں کو خراج تحسین پیش کیا۔

انہوں نے کہا کہ پوری قوم ان بہادر بیٹوں اور ان کے خاندانوں کو خراج تحسین پیش کرتی ہے جنہوں نے ملک کے امن اور سلامتی کے لیے اپنی قیمتی جانیں قربان کیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ دہشت گردی کے خاتمے کے لیے پاک فوج، قانون نافذ کرنے والے اداروں (ایل ای اے) اور انٹیلی جنس ایجنسیوں کے عزم، عزم اور صلاحیتوں پر کسی کو شک نہیں ہونا چاہیے۔ دہشت گردی کے خلاف ہماری کامیاب جنگ آخری دہشت گرد کے خاتمے تک جاری رہے گی۔



Source link

مقالات ذات صلة
- Advertisment -
Google search engine

الأكثر شهرة

احدث التعليقات