بین الاقوامیتازہ ترین

برگر ریستورانٹ میں 18 سال سے کم عمر بچوں کے لیے کھانے پر پابندی

امریکہ کا ایک برگر ریستورانٹ 18 سال سے کم عمر کے بچوں کے لیے کھانے کی سہولیات سے انکار کر رہا ہے جب تک کہ ان کے ساتھ والدین یا قانونی سرپرست نہ ہوں۔

یہ اعلان فیس بک پر ایک بیان میں کیا گیا۔ یہ بتایا گیا تھا کہ گاہک اپنے بیت الخلا میں چرس پیتے تھے ، جو ایک وقت میں ایک سے زیادہ افراد کے ساتھ قبضہ کر لیتے ہیں۔

بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ ای سگریٹ ان کے احاطے کے اندر استعمال ہو رہے تھے جبکہ اس کی تجارت پارکنگ میں ہو رہی ہے۔

برگر ریستورانٹ نے مزید کہا کہ سرسوں اور کیچپ کو بوتلوں اور جگہوں پر پھینک دیا جاتا ہے جبکہ ملازمین پر فرانسیسی فرائز بھی پھینکے جاتے ہیں۔ اس میں بتایا گیا ہے کہ وہ کینڈی ڈھونڈ کر کھرچتے تھے جو چھتوں پر پائی جاتی تھی۔

برگر جوائنٹ نے دعویٰ کیا کہ فریجز اور فواروں سے مشروبات چوری ہو رہے ہیں جبکہ ملازمین کے خلاف نامناسب زبان استعمال کی گئی۔ اس میں مزید کہا گیا ہے کہ 18 سال سے کم عمر کے صارفین میز پر پاؤں رکھتے تھے۔

اس میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ وہ دوسرے گاہکوں کے ساتھ غیر مہذب رویے اور گندی زبان بات کرتے تھے۔

یہ بھی پڑھیں: چینی مرد کی بیوی نےگھریلو تنازعے پرگھر چھوڑ دیا

انہوں نے مزید بتایا کہ کھانے پینے والے کو عزت نہیں مل رہی تھی۔

ان کے فیس بک پیج نے مزید بتایا کہ وہ پچھلے دو سالوں سے اس طرح کے رویے کو برداشت کر رہے تھے۔ اس میں کہا گیا ہے کہ اس طرح کے اقدامات حفاظت کے لیے کیے گئے ہیں۔

یہ ہمارا مقصد نہیں ہے کہ ہم اپنی برادری کے نوجوانوں کو جلاوطن کریں بلکہ اپنی املاک کی حفاظت کریں۔ ان کے کچھ اقدامات غیر قانونی ہیں اور ہم اس کی اجازت نہیں دیں گے۔

مزید بتایا گیا کہ انہیں نوجوانوں کو رات کے وقت علاقے میں توڑ پھوڑ کرنے میں پریشانی ہے۔ اس میں بتایا گیا ہے کہ مجرموں کو پکڑنے کے لیے سیکورٹی کیمرے نصب کیے جائیں گے۔

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button